مقبوضہ بلوچستان:کوئٹہ پاکستانی فورسز کے ہاتھوں ایک بلوچ نوجوان جبری لاپتہ

0
32

پاکستانی فورسز نے گھر پہ چھاپہ مار کر منیب بڑیچ کو گرفتار کرکے لاپتہ کردیا۔
چار ستمبر کو پاکستانی فورسز نے کوئٹہ سریاب روڈ پہ بلوچستان یونیورسٹی کے بمقابل واقع علاقے شفیع کالونی میں ایک گھر پر چھاپہ مار کر نوعمر منیب علی بڑیچ ولد نور علی بڑیچ کو گرفتار کرکے لاپتہ کردیا۔منیب علی کوئٹہ ڈگری کالج میں ایف ایس سی طالب علم ہے۔

خاندانی زرائع نے منیب علی بڑیچ کے پاکستانی فورسز اور خفیہ اداروں کے ہاتھوں لاپتہ ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ منیب علی کو رہا کیا جائے۔

خیال رہے کہ حالیہ کچھ عرصے سے بلوچستان کے مختلف علاقوں میں پاکستانی فورسز اور خفیہ اداروں کے ہاتھوں جبری گمشدگیوں کا سلسلہ ایک مرتبہ پھر تیز ہوگیا ہے۔دوسری جانب بلوچستان کے مختلف علاقوں سے لاپتہ ہونے والوں نوجوانوں کو سی ٹی ڈی کی جانب سے جعلی مقابلوں میں بھی قتل کا سلسلہ جاری ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں