مقبوضہ بلوچستان کے لیے پاکستان کے قیام کا دن چودہ اگست یوم سیاہ ہے،بی این ایم

0
49


بلوچ نیشنل موومنٹ نے پاکستان کے قیام کے دن چودہ اگست کو’یوم سیاہ‘ قرار دیتے ہوئے اس دن کی مناسبت سے بلوچستان میں وال چاکنگ کی اور بلوچ قوم کی آگاہی اور ترغیب کے لیے ایک پمفلٹ بھی شائع کیا۔ ضلع کیچ اور گوادر کے کئی علاقوں میں بی این ایم کی طرف سے وال چاکنگ کی گئی۔کیچ کے علاقے ’بالیچہ تمپ‘ کے مرکزی بازار میں بی این ایم کے جھدکاروں نے پاکستان کے خلاف وال چاکنگ کیا۔ آواران کے تحصیل جھاو اور بسیمہ کوڑاسک میں بھی بی این ایم کی طرف سے وال چاکنگ کیا گیا۔ انھوں نے یہ پیغام پھیلایا کہ بلوچ پاکستان کو تسلیم نہیں کرتے اور پاکستان کے قیام کے دن کو بلوچ قوم کے لیے یوم سیاہ مانتے ہیں۔ بالیچہ کے علاوہ کیچ کے علاقوں تربت، چاہ سر، ڈنک، گوکدان، ناسر آباد، کلاھو، گومازی، بلیدہ، الندور، میناز، کور ء ِ پشت، ڈمبانی ء ْ ضلع گوادر کی تحصیل پسنی کے گاؤں ببرشور میں بھی بی این ایم کی طرف سے چودہ اگست یوم سیاہ کی مناسبت سے وال چاکنگ کی گئی۔ بی این ایم نے چودہ اگست کی مناسبت سے ’چودہ اگست: تاریخ کا سیاہ باب‘ کے عنوان سے ایک پمفلٹ شائع کیا۔یہ پمفلٹ گذشتہ دن ضلع خضدار کی سب تحصیل گریشگ کے گاؤں سریج، گری، چیل،گواراست، تاپکو،جاروجی،پتنکنری،بدیرنگ، کوچہ، سھردپ،سھرکرودی اور گونی میں تقسیم کیا گیا اور کئی مقامات پر دیواروں پر چسپاں کیا گیا۔ اس بارے میں بی این ایم کے ترجمان قاضی ریحان نے کہا کہ بی این ایم کے نظریے سے وابستہ تمام حامی اور جھدکاروں کو ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ مناسب طریقے سے ’چودہ اگست یوم سیاہ‘ کے موقع پر پاکستان کو اپنا جواب لازما دیں۔ انھوں نے کہاہے کہ ایک دیوار پر بھی پاکستان کے خلاف اور بلوچ قومی تحریک کے حق میں ایک بات لکھ کر بھی آپ اپنے حصے کا کام کرسکتے ہیں۔ اسی طرح بی این ایم کے پمفلٹ کو بھی زیادہ سے زیادہ پھیلائیں تاکہ ہمارے ہر گھر میں بچے بچے کو معلوم ہو کہ پاکستان ہمارا دشمن ہے۔ اس نے ہماری گلزمین ہم سے چھینی ہے اور ہم پر مظالم ڈھا رہا ہے۔ہمیں اپنی قومی طاقت سے اس مظالم کو روک کر بلوچستان کی ا?زادی کی تحریک کو کامیاب بنانا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں