مقبوضہ بلوچستان: ساحل بلوچ میں پانی کی قلت، خواتین کا احتجاج، کوسٹل ہائی وے بلاک

0
56

بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر کے علاقے تحصیل جیونی سمیت اورماڑہ میں پانی کی قلت شدت اختیار کرگئی ہے۔

پانی کی شدید قلت کے خلاف خواتین کی بڑی تعداد نے سڑکوں پر نکل کر شہر کے دکانیں بند کردی اور مکران کوسٹل ہائی وے بند کرکے ٹریفک کی روانی معطل کر دیا ہے۔

احتجاجی مظاہرین کا کہنا ہے کہ جیونی میں کئی مہینوں سے پانی کی سپلائی بند ہے جسکے باعث شدید گرمی میں لوگ پیاسے اور پانی کے لیئے دربدر ہیں۔احتجاجی مظاہرین کا کہنا ہے کہ جیونی میں پانی کی قلت کا مسئلہ کہیں دہائیوں سے چلتا آرہا ہے مگر محکمہ پبلک ہیلتھ، ضلعی انتظامیہ، منتخب نمائندے پانی بحران پر قابو کرنے میں سنجیدہ نہیں ہیں اْنہیں جیونی کے شہریوں کی مشکلات اور تکالیف کا کوئی احساس تک نہیں ہے۔

اسی طرح گزشتہ روز اورماڑہ میں میں پانی کی قلت کی وجہ سے مظاہرہ کیا گیا تھا،واضح رہے کہ اورماڑہ میں پاکستان کی دوسری بڑی نیول بیس بھی ہے،مگر عام بلوچوں کو نہ صرف علاقہ بدر کیا جا رہا ہے بلکہ پانی اور دیگر بنیادی سہولیات سے محروم رکھا گیا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں