کورونا وائرس: انڈیا میں دنیا کی سب سے بڑی ویکسینیشن مہم کا آغاز

0
67

انڈیا میں لوگوں میں مصنوعی طور پر کسی بیماری کے خلاف قوتِ مداقعت پیدا کرنے کی دنیا کی سب سے بڑی مہم شروع کی گئی ہے جس میں صفائی کرنے والے ایک مزدور کو کووڈ19 کے خلاف ویکسین لگائی گئی ہے۔

وزیراعظم نریندر مودی نے مہم کا آغاز کیا ہے جس کا ہدف ایک اعشاریہ تین ارب لوگوں کو حفاظتی ٹیکے لگانا ہے۔

نریندر مودی نے اس موقعے پر ملک کے فرنٹ لائن ورکز کو خراجِ تحسین پیش کیا جنھیں اس ملک میں سب سے پہلے ویکسین لگائی جانی ہے۔

انڈیا دنیا میں کورونا وائرس کی وبا سے متاثر ہونے کے حوالے سے دوسرے نمبر پر ہے۔ اس مہم کے آغاز سے قبل گذشتہ چند روز میں دو منظور شدہ ویکسینز، کووی شیلڈ اور کویکسن، کے لاکھوں ٹیکے ملک کے مختلف حصوں میں ارسال کیے گئے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ انڈیا اپنی پوری آبادی کو یہ حفاظتی ٹیکے لگانے کی صلاحیت رکھتا ہے اور ایک ایپ کی مدد سے یہ کام کیا جائے گا جس کے ذریعے حکومت اس مہم کی پیش رفت پر نظر رکھے گی اور اس بات کو یقینی بنائے گی کہ کوئی بھی شخص رہ نہ جائے۔

انھوں نے کہا کہ ان ڈاکٹروں، نرسوں، اور دیگر فرنٹ لائن ورکرز نے تاریک دنوں نے ہماری روشنی کی راہ دیکھائی۔ ’وہ لوگ اپنے گھر والوں سے دور رہے، انھوں نے اپنی جانیں دیں، اور یہی وجہ ہے کہ سب سے پہلے ان لوگوں کو یہ دوا دی جا رہی ہے۔‘

وزیراعظم مودی نے لوگوں سے یہ بھی اپیل کی کہ وہ کووڈ 19 کے حوالے سے احتیاطی تدابیر جیسے کہ ماسک پہہنا اور سماجی دوری اختیار کرنا، کا خیال رکھیں۔ انھوں نے کہا کہ لوگوں کو ابھی سے یہ سب نہیں چھوڑ دینا چاہیے کیونکہ سب لوگوں کو ویکسین لگانے میں وقت لگے گا۔

انھوں نے لوگوں سے یہ بھی کہا کہ وہ ’ویکسینز کے بارے میں پروپیگنڈا اور افواہوں پر یقین نہ کریں۔‘

انھوں نے کہا کہ ’میں لوگوں کو یہ یقین دلانا چاہتا ہوں کہ ان ویکسینز کو منظوری تب ہی دی گئی ہے جب سائندان اور ماہرین ان کے بارے میں مطمئن تھے۔‘

پہلے راؤنڈ میں تقریباً 10 ملین ہیلتھ ورکز کو یہ ٹیکے لگائے جائیں گے۔ جس کے بعد پولیس والوں، فوجیوں، اور میونسپل ورکز کو یہ دوا دی جائے گی۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں